لکھیں اور 40404 پر سینڈ کریں۔ پھر اپنا نام لکھ کر 40404 پر سینڈ کریںFollow         Pak488 میں جا کر Write         Message     اردو ادب کے تمام شعرائے کرام کی شاعری کے ایس ایم ایس اپنے موبائل پر مفت حاصل کرنے کے لئے
جب بھی آتا ہے مرا نام ترے نام کے ساتھ جانے کیوں لوگ مرے نام سے جل جاتے ہیں قتیل شفائی






Abhi Guzray Dinon Ki Kuch Sadain Shor Karti hain





ابھی گزرے دنوں کی کچھ صدائیں شور کرتی ہیں
دریچے بند رہنے دو، ہوائیں شور کرتی ہیں

یہی تو فکر کے جلتے پروں پہ تازیانہ ہے
کہ ہر تاریک کمرے میں دعائیں شور کرتی ہیں

کہا نا تھا حصار اسم اعظم کھینچنے والے
یہاں آسیب رہتے ہیں بلائیں شور کرتی ہیں

ہمیں بھی تجربہ ہے بے گھری کا چھت نہ ہونے کا
درندے، بجلیاں، کالی گھٹائیں شور کرتی ہیں

ابھی گرد سفر کے گریے کی ہے گونج کانوں میں
ابھی کیوں منتظر خالی سرائیں شور کرتی ہیں

ہمیں سیراب رکھا ہے خدا کا شکر ہے اس نے
جہاں بنجر زمینیں ہوں انائیں شور کرتی ہیں
یاسمین حبیب

Relevent Best Poetry
Haq Wafa Kay Jo Hum Jatanay ...

Dil Garifta Hi Sahi Bazm Saj...

Gaye Mosmon Mein Jo Khiltay ...

Gaisu e Rukh Roshan Se Woh T...

Chor Kay Apna Nagar, Dil tu ...

Mujh Ko Utaar Harf Mein Jan ...



جب بھی آتا ہے مرا نام ترے نام کے ساتھ جانے کیوں لوگ مرے نام سے جل جاتے ہیں قتیل شفائی

Powered By: eVision Development Solutions Visit: www.evdsp.com