لکھیں اور 40404 پر سینڈ کریں۔ پھر اپنا نام لکھ کر 40404 پر سینڈ کریںFollow         Pak488 میں جا کر Write         Message     اردو ادب کے تمام شعرائے کرام کی شاعری کے ایس ایم ایس اپنے موبائل پر مفت حاصل کرنے کے لئے






Be Khabar Sa Tha Magar Sub Ki Khabar Rakhta Tha





بے خبر سا تھا مگر سب کی خبر رکھتا تھا
چاہے جانے کے سبھی عیب و ہنر رکھتا تھا

لا تعلق نظر آتا تھا بظاہر لیکن
بے نیازانہ ہر اک دل میں گزر رکھتا تھا

اس کی نفرت کا بھی معیار جدا تھا سب سے
وہ الگ اپنا اک انداز نظر رکھتا تھا

بے یقینی کی فضاؤں میں بھی تھا حوصلہ مند
شب پرستوں سے بھی امید سحر رکھتا تھا

مشورے کرتے ہیں جو گھر کو سجانے کے لیے
ان سے کس طرح کہوں میں بھی تو گھر رکھتا تھا

اس کے ہر وار کو سہتا رہا ہنس کر محسنؔ
یہ تاثر نہ دیا میں بھی سپر رکھتا تھا

محسن بھوپالی
Relevent Best Poetry
Hum Bhi Shair Thay Kabhi Jan...

Ab Na Wo Shor Na Wo Shor Mac...

Mareez e Muhabbat Unhi Ka Fa...

Jab hua Arfaan To Gham Aaram...

Mehrban Ho Kay Bula Lo Mujhe...

Khud Dil Mein Reh Kay Aankh ...



Powered By: eVision Development Solutions Visit: www.evdsp.com