لکھیں اور 40404 پر سینڈ کریں۔ پھر اپنا نام لکھ کر 40404 پر سینڈ کریںFollow         Pak488 میں جا کر Write         Message     اردو ادب کے تمام شعرائے کرام کی شاعری کے ایس ایم ایس اپنے موبائل پر مفت حاصل کرنے کے لئے






Na Wo Khizan Rahi Baqi Na Woh Bahaar Rahi..





نہ وہ خزاں رہی باقی نہ وہ بہار رہی
رہی تو میری کہانی ہی یادگار رہی

وہی نظر ہے نظر جو بایں ہمہ پستی
ستارہ گیر رہی کہکشاں شکار رہی

شب بہار میں تاروں سے کھیلنے والے
کسی کی آنکھ بھی شب بھر ستارہ بار رہی

تمام عمر رہا گرچہ میں تہی پہلو
بسی ہوئی مرے پہلو میں بوئے یار رہی

کوئی عزیز نہ ٹھہرا ہمارے دفن کے بعد
رہی جو پاس تو شمع سر مزار رہی

وہ پھول ہوں جو کھلا ہو خزاں کے موسم میں
تمام عمر مجھے حسرت بہار رہی

کبھی نہ بھولیں گی اس شب کی لذتیں اخترؔ
کہ میرے سینے پہ وہ زلف مشکبار رہی

اختر شیرانی
Relevent Best Poetry
Mareez e Muhabbat Unhi Ka Fa...

Main bhi Aye Kaash Kabhi Moj...

Shikwa Karain to Kis Se Shik...

Yeh Baat Baat Mein Kiya Nazk...

Woh Ghazal Walon Ka Asloob S...

Sar Jhatkane See Kuch Nahin ...



Powered By: eVision Development Solutions Visit: www.evdsp.com