لکھیں اور 40404 پر سینڈ کریں۔ پھر اپنا نام لکھ کر 40404 پر سینڈ کریںFollow         Pak488 میں جا کر Write         Message     اردو ادب کے تمام شعرائے کرام کی شاعری کے ایس ایم ایس اپنے موبائل پر مفت حاصل کرنے کے لئے
جب بھی آتا ہے مرا نام ترے نام کے ساتھ جانے کیوں لوگ مرے نام سے جل جاتے ہیں قتیل شفائی






Khud Se nahin Faraar December Kay bad Bhi





خود سے نہیں فرار ، دِسمبر کے بعد بھی
نہ موت ، نہ قرار ، دِسمبر کے بعد بھی

نیزوں پہ اَب کے ایسے چڑھے اَدھ کھِلے گلاب
زَخموں پہ ہے بہار ، دِسمبر کے بعد بھی

اَبدی فقیر کر گئی ، تقدیر کی لکیر
دامن ہے تار تار ، دِسمبر کے بعد بھی

یخ بستہ مٹھیوں میں لئے غم کے زَرد پھول
دِل محوِ اِنتظار ، دِسمبر کے بعد بھی

گُل کے قصیدے چھوڑ دے ، نادان عندلیب
روئے گی زار زار ، دِسمبر کے بعد بھی

صیاد کے مفاد میں ، کترے گا اَپنے پر
زِنداں پسند یار ، دِسمبر کے بعد بھی

میں تو سُکون کے لئے رویا تھا کھل کے قیسؔ
اَندر ہی تھا غُبار ، دِسمبر کے بعد بھی

شہزادقیس 

Relevent Best Poetry
Mareez e Muhabbat Unhi Ka Fa...

Sitaron Sey Kaho....

MItthi kheer Paka Muhammad...

Khud Se nahin Faraar Decembe...

December Ki Thitharti Hoi Sh...

Koi Agar Mar Jaye to....



جب بھی آتا ہے مرا نام ترے نام کے ساتھ جانے کیوں لوگ مرے نام سے جل جاتے ہیں قتیل شفائی

Powered By: eVision Development Solutions Visit: www.evdsp.com